عمران خان استعفیٰ دے دیں اسی میں ان کی بہتری ہے، وزیراعظم کو 13دن کا الٹی میٹم دیدیا گیا

لاہور(نیوز ڈیسک) مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما خواجہ آصف کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کو 13 دن کا الٹی میٹم ہے اور وہ اس الٹی میٹم کا وقت پورا ہونے سے قبل استعفی دے دیں اسی میں ان کی بہتری ہے۔صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ آصف نے کہا کہ اگر وزیراعظم 13 دن میں مستعفی نہ ہوئے تو پھر ان کو بتائیں گے کہ انہوں نے گھر کیسے جانا ہے۔خواجہ آصف نے کہا کہ جس طرح وزیر اعظم عمران خان کو یہ سمجھ آگئی تھی کہ جلسہ تو ہوکر رہے گا اور اب وہ ملتان کے جلسہ کو بخوبی سمجھ جائیں اور سپنے گھر واپس چلے جائیں۔

انھوں نے کہا کہ اگر وزیر اعظم عمران خان 13 دن میں مستعفی نہ ہوئے تو پھر ان کو بتائیں گے کہ انھوں نے گھر کیسے جانا ہے۔ انھوں نے کہا کہ گوجرانوالہ کے جلسہ سے لے کر ملتان کے جلسہ تک فسطائی ووٹ چور حکومت نے پی ڈی ایم کا ہر جلسہ روکنے کی ناکام کوشش کی جبکہ حکومت کو ہر بار منہ کی کھانا پڑی۔انھوں نے کہا کہ آٹا چینی چور حکومت کی ہر کوشش عوام کے سمندر نے ناکام بنادی ہے اور عوام اب پی ڈی ایم کے ساتھ ہے۔ انھوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان آپ بہت جلد دیکھیں گے کہ عوام کا ایسا سمندر امڈ کر آئے گا جو آپ کی ووٹ چورظالم حکومت کو بہا کر لے جائے گا۔ انھوں نے کہا کہ عوام آپ پر عدم اعتماد کرچکے اور ووٹ چور حکومت کے دن گنے جاچکے ہیں بلکہ ?13 دن میں آپ نے قوم کا فیصلہ نہ مانا تو عوامی سمندر آپ کے جعلی اقتدار کے لئے سونامی ثابت ہوگا۔انھوں نے کہا کہ عوامی عدالت نے آپ کی رخصتی کا حکم لکھ دیا ہیاور پی ڈی ایم اس پر عمل درآمد کرائے گی۔ایک اور بیان میں ستان مسلم لیگ (ن) کے سینیئر رہنما خواجہ آصف نے کہا ہے کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) حکومت کیخلاف کوئی غیر آئینی راستہ اختیار نہیں کرے گی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں