بلاول بھٹو نے وزیراعظم عمران خان کو سکیورٹی رسک قرار دے دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک ) عمران خان اسمبلی فلور پر اسامہ بن لادن کو شہید کہہ رہے ہیں، اسامہ بن لادن دہشت گرد نہیں تو پھر کون دہشت گرد ہے، عمران خان کے سہولت کاروں کا پتہ لگایا جائے، بلاول بھٹو نے وزیراعظم عمران خان کو سکیورٹی رسک قرار دے دیا- تفصیلات کے مطابق چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ عمران خان پاکستان کیلئے سکیورٹی رسک ہیں، عمران خان کے سہولت کاروں کا کب پتہ لگایا جائے گا- بلاول بھٹو نے مزید کہا کہ وزیراعظم عمران خان اسمبلی فلور پر کھڑا ہو کر اسامہ بن لادن کو شہید کہہ رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ اگر اسامہ بن لادن دہشت گرد نہیں تو پھر کون دہشت گرد ہے-

اسامہ بن لادن کی وجہ سے پوری دنیا دہشت کا شکار رہی، کئی بے قصور اور معصوم جانیں دہشت گردی کی نظر ہو گئیں- پارلیمنٹ ہاؤس میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ وزیراعظم کا خواتین سے ‏متعلق بیان افسوس ناک ہے ہمیں مظلوم کا ساتھ دینا چاہئیے بہانے بنا کر ظالم کا ساتھ نہیں دینا ‏چاہئے۔بلاول بھٹو نے کہا کہ وزیراعظم کو الفاظ کا چناؤ سوچ سمجھ کر کرنا چاہئیے ایسے بیانات سے ظالم ‏کو فائدہ پہنچتا ہے وزیراعظم کے بیان سے لگتا ہے زیادتی کا شکار ہونے والوں سےزیادتی ہو رہی ‏ہے۔ انہوں نے کہا کہ لباس کا ریپ کے ساتھ کوئی تعلق نہیں ہے بچوں سے لے کر بڑوں تک لوگ ‏زیادتی کا شکار ہو رہے ہیں سب سے زیادہ ریپ کا شکار خواتین ہو رہی ہیں ہمیں خواتین کیلئے ‏اسٹینڈ لینا پڑے گا۔چیئرمین پی پی کا کہنا تھا کہ عمران خان کے آنے سے قبل اور بعد میں حالات کیا ہیں موٹر وے ‏اور ہوائی اڈوں کو گروی رکھنے کا منصوبہ ناکام ہوجائے گا عمران خان نے جس منصوبے میں ہاتھ ‏ڈالا اس کا نقصان ہوا بہتری نہیں ہوئی۔ چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے وزیراعظم عمران خان کو مشورہ دیا ہے کہ خان صاحب، آپ ایسے عہدے پر بیٹھے ہیں، جہاں لہجہ سوچ سمجھ کر چننا چاہیے۔ بلاول بھٹو زرداری نے یہ بھی کہا کہ اسلام ہمارا کلچر ہے جو ہمیں سکھاتا ہےکہ کپڑے کیسے پہننے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کپڑوں کا نہ ریپ اور نہ ہی زیادتی سے کوئی تعلق ہے، جس نے زیادتی کی یا ظلم کیا، اس کے لیے ایک جیسا قانون ہونا چاہیے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں