جے یو آئی سے نکالے جانیوالے رہنما ایک بار پھر فضل الرحمن پر برس پڑے

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) جمیعت علمائے اسلام (ف) سے نکالے جانے والے رکن مولانا شجاع الملک نے ایک بار پھر مولانا فضل الرحمان پر تنقید کر دی ۔ تفصیلات کے مطابق جمعیت علما اسلام (ف) کے سربراہ کی مخالفت پر پارٹی سے نکالے جانے والے رہنما مولانا شجاع الملک نے مولانا فضل الرحمان کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ مولانا فضل الرحمان بند گلی میں پھنس چکے ہیں، اگر اُن کا دامن صاف ہے تو نیب میں کیوں پیش نہیں ہوتے ۔مردان میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مولانا شجاع الملک نے کہا کہ مولانا نیب سے بچنے کے لیے یہ سارے ڈرامے کررہے ہیں ۔ شجاع الملک نے کہا کہ ’مولانا نےکرپشن چھپانےکیلئے پوری جماعت کو یرغمال

بنایاہوا ہے، مجھے یا دیگر رہنماؤں کی رکنیت صفائی کا موقع دیے بغیر ہی ختم کردی گئی جبکہ میں مرکزی شوریٰ کا ممبر بھی ہوں مگر اجلاس میں نہیں بلایا گیا‘۔انہوں نے دعویٰ کیا کہ ’ ہم اکیلےنہیں چاروں صوبوں کے کارکن ہمارے ساتھ ہیں، فضل الرحمان سے اختلافات آج سے نہیں بلکہ تیرہ سال پرانے ہیں۔ اداروں کے خلاف بیانیہ جمعیت علما اسلام کا نہیں بلکہ مسلم لیگ ن کا ہے‘۔ انہوں نے مزید کہا کہ پی ڈی ایم ایک پیج پر نہیں، اس لیے یہ حکومت نہیں گراسکتے، مولانا فضل الرحمان کو قوم کی نہیں بلکہ اپنی فکر ہے‘۔ اُن کا کہنا تھا کہ ’پی ڈی ایم میں شامل کسی جماعت میں جمہوریت نہیں ہے، اداروں کےسامنے دھرنوں کی باتیں بچگانہ ہیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں